تبلیغات
شیعه علماء کونسل پاکستان - پہاڑ گنج دھماکے خوف و ہراس کی فضا پیدا کرنے کے لئے کئے گئے ہیں، ہم بم دھماکوں سے گھبرا کر عزاداری امام حسین علیہ السلام کو نظر اندارنہیں کرسکتے،علامہ ناظر عباس تقوی


علامہ ناظر عباس تقوی
کراچی میں دو امام بارگاہوں کے باہر یکے بعد دیگرے ہونے والے تین دھماکوں میں نجی ٹی وی کے دو رپورٹرز اور کیمرہ مین سمیت 12 افراد زخمی ہوئے ہیں ۔  میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ کراچی کے علاقے پہاڑ گنج میں امام بارگاہ کے نزدیک وقفے وقفے سے تین دھماکے ہوئے جس میں نجی ٹی وی کے دو رپورٹرز اور کیمرہ مین سمیت 12 افراد زخمی ہوئے ہیں ۔  پہلا دھماکا کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد پہاڑ گنج میں واقع امام بارگاہ ابوالفضل  کے قریب رات 9 بج کر 45 منٹ پر ہوا، بم ڈسپوزل اسکواڈ کے مطابق دھماکا بلاک بم کے ذریعے کیا گیا جس میں ایک بچے سمیت 2 افراد زخمی ہو گئےاورایک گاڑی کو نقصان پہنچا ہے۔ ،ایس ایس پی پولیس کے مطابق دھماکا شدید نوعیت کا تھا جس کی آواز دور دور تک سنی گئی، دھماکے کے بعد پولیس کی بھاری نفری اور  میڈیا کے نمائندے موقع پر پہنچ گئے جبکہ بم ڈسپوزل اسکواڈ کو بھی طلب کرلیا گیا جس نے تلاشی کے بعد علاقے کو کلیئر کردیا۔  بی ڈی ایس کی جانب سے کلیئرنس کے بعد پولیس اورمیڈیا اہلکار معمول کی کارروائی میں مصروف تھے کہ تقریباً گیارہ بجے نالے کے قریب ایک اور دھماکا ہوگیا ۔

دوسرے دھماکے میں 2 پولیس اہلکار اور نجی ٹی وی کے رپورٹر خضر اور رضا عابدی، کیمرا مین دانش اور نزاکت حسین سمیت 8 افراد زخمی ہوئے۔ جنہیں فوری طور پر عباسی شہید اسپتال منتقل کردیا گیا۔ دونوں دھماکے کنٹرول ڈیوائس سے کئے گئے تھے پہلے دھماکے میں آدھا کلو دھماکہ خیز مواد استعمال کیا گیا تھا ۔ جبکہ تیسرا دھماکا نارتھ کراچی سیکٹر الیون بی میں امام بارگاہ کے باہر دستی بم پھینک کر کیا گیا جس کے پھٹنے سے 2 پولیس اہل کار زخمی ہوئے۔ زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا گیا۔  واقعہ کی اطلاع ملتے ہی قانون نافذ کرنے والے ادارے اور ریسکیو کی ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچ گئیں اور ایمبیولینسوں کے ذریعے زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ دھماکوں کے بعد شہر بھر میں ریڈ الرٹ جاری اورسیکیورٹی انتہائی سخت کر دی گئی ہے۔ گورنر سندھ نے پہاڑ گنج دھاکوں کا نوٹس لے لیا ہے اور آئی جی سندھ سی سی پی او سے رپورٹ طلب کرلی ہے،  گورنر سندھ نے ہدایات جاری کی ہیں کہ مجالس اور جلوس عزا کی سیکورٹی میں کسی قسم کی غفلت کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔ شیعہ علماء کونسل پاکستان نے ان واقعات کی شدید مذمت الفاظ میں مذمت کی ہے، اس موقع پرشیعہ علماء کونسل پاکستان سندھ کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ ناظر عباس تقوی نے کہا  کہ محرم الحرام کے دوران کراچی کے واقعات جہاں ملک کی بدتر صورت حال کی عکاسی کرتے ہیں وہاں آمدہ  جلوس ھائے عاشور کے حوالے سے خطرات کے الارم کا کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا  کہ میں پہلے بھی واضح کر چکا کہ اگر سیکیورٹی ادارے عزاداری سید الشهداء (ع) کو تحفظ دے سکتے ہیں توصحیح  ہے ورنہ  میدان سے ہٹ جائیں پھر ہم جانیں اور وه دہشت گرد جانیں، جہاں ہم حسین (ع) کے نام پر جان دینا جانتے ہیں وہاں حسین (ع) کے نام پر جان لینا بھی جانتے ہیں- اس حساسیت کے پیش نظر ہماری ذمہ داریوں میں بہت اضافہ ہو جاتا ہے اورعزاداران امام حسین (ع) کو آمادہ و تیار رہنا ہو گا۔ علامہ ناظر عباس تقوی نے کہا  کہ پہاڑ گنج دھماکے  خوف و ہراس کی فضا پیدا  کرنے کے لئے کئے گئے ہیں تاکہ لوگ جلوس ھائے عاشور میں شرکت نہ کرسکیں، مگرہم ہماری قوم کی تو تمنا ہی یہی ہے کہ یاحسین کہتے موت آئے- ہمیں بم دھماکوں سے ہراساں نہیں کیا جاسکتا ہم بم دھماکوں سے گھبرا کر عزاداری امام حسین علیہ السلام کو نظر اندارنہیں کرسکتے بلکہ اس سال جلوس ھائے عزا میں گذشتہ سالوں بڑھ کر مشارکت ہوگی-


  • آخرین ویرایش:جمعه 24 آبان 1392
نظرات()   
   
Do compression socks help with Achilles tendonitis?
دوشنبه 30 مرداد 1396 12:45 ب.ظ
At this moment I am going away to do my breakfast, later than having my breakfast coming yet again to read
additional news.
deliciaSalimi.jimdo.com
سه شنبه 24 مرداد 1396 11:08 ق.ظ
Useful information. Fortunate me I discovered your website by chance, and I am shocked why this coincidence did not
happened in advance! I bookmarked it.
 
لبخندناراحتچشمک
نیشخندبغلسوال
قلبخجالتزبان
ماچتعجبعصبانی
عینکشیطانگریه
خندهقهقههخداحافظ
سبزقهرهورا
دستگلتفکر
آخرین پست ها

بزدلانہ اقدامات سے نہ تو زائرین کی مقدس ہستیوں کے حوالے سے عقیدت و احترام میں کمی لائی جاسکتی ہے اور نہ ہی ان کے شوق زیارت کودبایا جاسکتا ہے۔ ..........یکشنبه 1 تیر 1393

شیعہ علماء کونسل پنجاب کا سانحہ ماڈل ٹاون لاہور میں جانبحق ہونیوالے عوامی تحریک پاکستان کے کارکنان کی رسم قل خوانی میں شرکت اور خطاب ..........یکشنبه 1 تیر 1393

آزادی صحافت کے حامی ہیں، حکومت مثبت تنقید برداشت کرے، صحافی برادری بھی ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ضابطہ اخلاق مرتب کرے، شیعہ علماء کونسل ..........یکشنبه 1 تیر 1393

ہمسائیہ ملک سے تعلقات بہتر ہونے چاہئیں مگر مسئلہ کشمیر کے حل کو اولیت دی جائے، قائد ملت جعفریہ پاکستان ..........چهارشنبه 7 خرداد 1393

کربلا فقط ایک واقعہ یا مصائب و آلام کی علامت نہیں بلکہ ایک تحریک اور نظام کا نام ہے ; قائد ملت جعفریہ پاکستان ..........چهارشنبه 7 خرداد 1393

علامہ محمد رمضان توقیرنے حضرت آیت اللہ سید محمد باقر شیرازی کی وفات پران کے اہل خانہ سے فاتحہ خوانی کی اورقائد ملت جعفریہ پاکستان کا تعزیتی پیغام پہنچایا ..........چهارشنبه 7 خرداد 1393

شیعہ علماءکونسل صوبہ خیبر پختون خواہ کے صوبائی صدرعلامہ محمد رمضان توقیرنے دفترقائد ملت جعفریہ پاکستان شعبہ مشہد کا دورہ کیا ..........چهارشنبه 7 خرداد 1393

جعفریہ یوتھ کے نوجوان مستقبل کی امید اور انقلاب کے لیے اولین معاون ثابت ہوں گے‘ علامہ ساجد نقوی ..........شنبه 3 خرداد 1393

ملک سے دہشت گردوں کا خاتمہ اورامن وامان بحال کرنا ریاست کی ذمہ داری ہے،قائد ملت جعفریہ پاکستان ..........شنبه 3 خرداد 1393

قائد ملت جعفریہ پاکستان حضرت آیت اللہ علامہ سید ساجد علی نقوی کا دورہ نوابشاہ سندھ، مومنین کا شاندار استقبال ..........شنبه 3 خرداد 1393

حراموش میں اسلامی تحریک پاکستان وشیعہ علماء کونسل کے سیاسی سیل کا اہم اجلاس ..........شنبه 3 خرداد 1393

شیعہ علماء کونسل گلگت کا اہم ڈویژنل تنظیمی اجلاس،علامہ شیخ سجاد حسین قاسمی کونیا صدرمنتخب کرلیا گیا ..........شنبه 3 خرداد 1393

اسلامی تحریک پاکستان و شیعہ علماء کونسل کے سیاسی سیل کا دورہ نگرل، انجمن حیدریہ نگرل کا اسلامی تحریک پاکستان پرمکمل اعتماد کا اظہار ..........شنبه 3 خرداد 1393

شیعہ علماء کونسل و اسلامی تحریک پاکستان کے سیاسی سیل کے وفد کی امام جمعہ والجماعت جامع مسجد گلگت آغا سید راحت حسین الحسینی سےخصوصی ملاقات ..........شنبه 3 خرداد 1393

کیا آپ کو معلوم ہے..........یکشنبه 14 اردیبهشت 1393

همه پستها